خبر
2/2/2013
شہید ڈاکٹر چمران کے مختصر حالات زندگی

 
شہید ڈاکٹر چمران کے مختصر حالات زندگی

پیدایش اورتعلیم
معاشرتی سرگرمیاں
انقلاب اسلامی کی کامیابی کے بعد
وزارت دفاع میں تعیناتی
شہادت

پیدایش اور تعلیم
ڈاکڑ مصطفی چمران کا شمار ایران کی چند معروف شخصیات میں ہوتا ہے جنہوں نے اپنی قوم کے لئے عظیم انقلابی سرگرمیاں انجام دیں اور قوم کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے میں ایک اہم کردار ادا کیا ۔ آپ سن ۱۳۱۱ ھ.ش کو ترںان میں پیدا ہوئے۔
آپ نےاپنی ابتدائی تعلیم کا آغاز تہران میں واقع انتصاریہ سکول سے کیا اور پھر دارالفنون۱ اور البرز۲ جیسے مدارس میں اپنی تعلیم کو جاری رکھا . اس کے بعد تہران یونیورسٹی کے ٹیکنیکل ڈیپارٹمنٹ میں داخلہ لیا اور سن ۱۳۳۶ہجری شمسی میں الیکٹرومیکانیک کے شعبہ میں اپنی ڈگری مکمل کی ۔ پھر ایک سال تک اسی ڈیمارٹمنٹ میں انہوں نے تدریس کی ۔

شہید ڈاکٹر چمران تہران یونیورسٹی میں
انہوں نے اپنی تعلیم کے دوران ہر کلاس میں پہلی پوزیشن حاصل کی.اور سن۱۳۳۷ہجری شمسی میں اعلی تعلیم کی غرض سے اسکالرشپ پر امریکا تشریف لے گئے اور وہاں دنیا کے معروف ترین دانشمندوں کی موجودگی میں تحقیقاتی سرگرمیاں انجام دیں ۔ انہوں نے امریکا کی مشہور یونیورسٹیوں کیلی فورنیا اور برکلے میں اعلی علمی ذوق کے حامل اساتذہ کی زیر نگرانی الیکٹرونیک اور پلازما فزیکس کے شعبہ میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی ۔

شہید ڈاکٹر چمران امریکا میں
امریکا میں اپنے قیام کے دوران انہوں نے اپنے بعض دوسرے دوستوں کی مدد سے پہلی بار اسلامک اسٹوڈنٹس سوسائٹی ( انجمن دانشجویان اسلامی ) کی بنیاد رکھی اور اس کے مقاصد کو حاصل کرنے کے لئے انہوں نے انتھک جدوجہد کی ۔ امریکا میں موجود ایرانی اسٹوڈنٹ کمیونیٹی میں ان کا شمار اس سوسائیٹی کے سرگرم رکن کی حیثیت سے ہوتا تھا ۔ ان کو اپنی سرگرمیوں کی سزا یہ ملی کہ ایران میں موجود حکومت شاہ نے ان کا تعلیمی وظیفہ روک دیا ۔

معاشرتی سرگرمیاں
جب آپ کی عمر پندرہ سال کو پہنچی تو ہدایت مسجد۳ میں مرحوم آیت اللہ طالقانی کے درس تفسیر قرآن اور استاد شہید مرتضی مطہری۴کے درس منطق اور فلسفے کی کلاسوں میں شرکت کیا کرتے تھے ۔
آپ تہران یونیورسٹی میں اسلامک اسٹوڈنٹس سوسائٹی کے ابتدائی اراکین میں سے تھے ۔ سیاسی تنازیات میں ڈاکٹر مصدق کے دور( چودہویں اسمبلی ) سے لے کر تیل کی صنعت کے قومی تحویل میں آنے تک سرگرم عمل رہے ۔

انقلاب اسلامی کی کامیابی کے بعد
ڈاکٹر چمران جو ملک سے باہر تشریف لے گئے تھے اسلامی انقلاب کی کامیابی کے بعد۲۳سال کا عرصہ ملک سے باہر گزار کر وطن واپس آ گئے ۔ یہاں واپس آنے کے بعد انہوں نے اپنی تمام علمی اور انقلابی صلاحیتوں کو تعمیری کاموں میں صرف کرنے کے لئے انقلاب اسلامی کی خدمت میں پیش کر دیا ۔ آپ کو وزیراعظم کا معاون مقرر کر دیا گیا اور اس دوران آپ نے اپنی جان کو خطرہ میں ڈالتے ہوئے کردستان میں موجود شورش کا حل نکالا ۔

وزارت دفاع میں تعیناتی
کردستان میں بے نظیر کامیابی حاصل کرنے کے بعد آپ کو ترےان کی طرف بلایا گیا اور امام خمینی (رح) کے حکم پر وزارت دفاع سے منسلک ہو کر اپنے فرائض انجام دینے لگے ۔

شہادت
آپ خرداد کے مہینے سن ۱۳۶۰ہجری شمسی میں شہادت کے رتبہ پر فائز ہوئے اور ہمیشہ کے لئے خالق حقیقی سے جا ملے ۔

وضاحت طلب الفاظ
۱۔دارالفنون : سکول کا نام ہے جوتر ان میں ناصرالدین شاه کے زمانے میں امیر کبیر کے حکم کے تحت نئے جدید سائنسی علوم سیکهنے کے لئے بنایا گیا ۔
۲۔البرز ہائے سکول : ترمان کے پرانے سکولوں میں سے ہے . چونکہ اس کے پیچهے البرز پامڑ واقع تها اس لئے البرز کے نام سے جانا جاتا تھا ۔
۳۔ہدایت مسجد : آیت الله طالقانی کی کلاسیں (تفسیر قرآن) اسی مسجد میں تشکیل پاتی تهیں ۔
۴۔شہید مطہری : معروف ایرانی معلم کہ اسے وہ حیثیت ملی کہ جس کے یوم شہادت پر استاد کا دن (روز معلم) کا نام رکها گیا ہے ۔
http://urdu.tebyan.net/index.aspx?pid=68619
 
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...